CLICK HERE FOR VARIOUS NEW JOBS 
CLICK HERE FOR VARIOUS EDUCATIONAL NEWS 
CLICK HERE FOR NEW SCHOLARSHIPS 
CLICK HERE FOR ADMISSION NOTICES 
Click And Follow On Google+ To Get Updates
Please Wait 10 Seconds... OR You CanSkip

ADMISSION NOTICES
Scholarships

Scholarship-300x291

BUDGET 2014-15
budget_2014-2015
New Date Sheets
VU SOLVED ASSIGNMENTS
Recent Posts

Posts Tagged ‘بحریہ ٹاون مالی بحران کا شکار: 30 فیصد ملازمین فارغ’

بحریہ ٹاون مالی بحران کا شکار: 30 فیصد ملازمین فارغ

بحریہ ٹاون مالی بحران کا شکار: 30 فیصد ملازمین فارغ

نجی شعبے میں پاکستان کاسب سے بڑاہاوسنگ ادارہ ہونے کے دعویدار ، بحریہ ٹاؤن کی انتظامیہ نے لاہور میں اپنے 30فیصد ملازمین کو اچانک فارغ کر دیا ہے ۔اس فیصلے کے پس منظر میں ادارے کابڑھتا ہوا مالی بحران بتایا جا رہا ہے۔ بحریہ ٹاون کے اندرونی ذرائع کا کہنا ہے بحریہ ٹاؤن نے اپنے لاہور آفس سے کم و بیش 30فیصد ملازمین کو ملازمت سے فراغت نامے تھما دئیے ہیں جن کی تعداد لگ بھگ 1500بنتی ہے۔تفصیلات کے مطابق ان میں زیادہ تر وہ ملازمین شامل ہیں جن کا تعلق چھوٹے گریڈ سے ہے اور وہ کم تنخواہ پر کام کرتے ہیں۔ اہم بات یہ ہے کہ بہت سے ملازمین کو نوکری سے برخاست کرنے کی وجہ بھی نہیں بتائی گئی جب کہ کچھ کو یہ وجہ بتائی گئی ہے کہ ادارہ مالی مشکلات سے دوچار ہے۔ بحریہ ٹاؤن لاہور کے ایک ملازم نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ وہ افسران جو بھاری تنخواہوں پر کام کر رہے ہیں وہ نہ صرف بدستور اپنی ملازمتوں پرموجود ہیں بلکہ تنخواہ کیساتھ ساتھ دیگر مراعات سے بھی لطف اندوز ہو رہے ہیں۔ دوسری طرف بہت سے عہدوں پر اضافی لوگ کام کر رہے ہیں۔ اگر نکالنا ہی مقصود ہے تو ان میں سے صرف چند کو فارغ کر کے ادارے کا مالی بوجھ کم کیا جا سکتا تھا ۔ان کا کہنا ہے ایک ایک عہدے پر دو دو لوگوں کی تقرری کی منطق سمجھ سے بالاتر ہے۔ مذکورہ ملازم کا کہنا تھا کہ یوں تو بحریہ ٹاؤن فلاحی ادارہ ہونے کا دعوے دار ہیں جو لوگوں کی مدد کرنے میں پیش پیش رہتا ہے مگر دوسری طرف وہ لوگوں کو بے روزگار کرکے غریب ملازمین کے گھروں کے چولہے ٹھنڈے کر رہا ہے۔ بحریہ ٹاون پر برا وقت اُس وقت شروع ہوا تھا جب جنرل راحیل شریف نے چند حاضر سروس اور حالیہ ریٹائرڈ شدہ جرنیلوں کی رئیل اسٹیٹ کے شعبے میں بڑھی دلچسپی پر گرفت کی اور بحریہ ٹاون کے مالک ، ملک محمد ریاض کو وہ پنتیس ارب روپے واپس کرنے کا حکم دیا تھا جو بحریہ ٹاون انتظامیہ نے ڈیفنس ہاوسنگ اتھارٹی کے ترقیانی پارٹنر اور ٹھیکیدار کے طور پر’’ڈی ایچ اے سٹی ‘‘ اور ’’ ڈی ایچ اے ویلی ‘‘ جیسے منصوبوں کے نام پر لوگوں سے اینٹھے گئے تھے ۔ اگرچہ اس رقم کوبعد ازاں برطانیہ کے رئیل اسٹیٹ کے شعبے میں لگا کر اسے کئی گنا کر لیا گیا تا ہم اصل زر اور منافع کبھی بھی پاکستان واپس نہ آ سکا۔ ان منصوبوں کے متاثرین میں سے اکثریت کا تعلق فوج کے حاضر سروس اور ریٹائر ڈ افسران سے تھا۔ ملک ریاض کو نہ صرف یہ رقم واپس کرنا پڑی بلکہ ٹیکس کی مد میں چوری کئے گئے تقریباً اٹھارہ ارب روپے بھی واپس لوٹانا پڑے۔ یہ امر بھی قابلِ ذکر ہے کہ بحریہ ٹاون لاہور میں گھر بنا کر بیچنے والے چھوٹے چھوٹے ٹھیکیدار بھی اس کی گرتی ساکھ سے متاثر ہو رہے ہیں اور ان کے کاروبار بھی عملی طور پر ٹھپ ہو گئے ہیں۔ تیس فی صد سٹاف کی کمی اس بات کا اعلان ہے کہ کمپنی واقعی بحران میں جا چکی ہے۔

ALL NEW RESULTS
Educational News

Updated Educational News

Categories
POSTS BY DATE
December 2016
M T W T F S S
« Sep    
 1234
567891011
12131415161718
19202122232425
262728293031