CLICK HERE FOR VARIOUS NEW JOBS 
CLICK HERE FOR VARIOUS EDUCATIONAL NEWS 
CLICK HERE FOR NEW SCHOLARSHIPS 
CLICK HERE FOR ADMISSION NOTICES 
Click And Follow On Google+ To Get Updates
Please Wait 10 Seconds... OR You CanSkip

ADMISSION NOTICES
Scholarships

Scholarship-300x291

BUDGET 2014-15
budget_2014-2015
New Date Sheets
VU SOLVED ASSIGNMENTS
Recent Posts
output_ehhkRg

Introduction to Computer , Urdu medium Computer Science notes Punjab Boards Examinations

Introduction to Computer , Urdu medium Computer Science notes Punjab Boards Examinations

سوال نمبر-: 1 کمپیوٹر کی تعریف کریں ؟ نیز کمپیوٹر کے فوائد اور نقصانات مختصراً بیان کریں۔
(What is Computer? What are its Benefits & Drawbacks?)
جواب : کمپیوٹر کی تعریف -: کمپیوٹر ایک الیکٹرانک آلہ یا مشین ہے۔ جس کا کام ڈیٹا کوحاصل کرنا ، اس پر عمل کرنا ، اس کا تجزیہ کرنا اور ہماری دی ہوئی ہدایات کے مطابق عمل کرنا ہے۔ کمپیوٹر جدید دور کا ایک مفید ترین اور ہمہ گیر اہمیت کا حامل آلہ ہے۔ کمپیوٹر نے بین الاقوامی تجارت ، صنعتی پیداوار ، گھریلو زندگی ، تفریح کے ذرائع، فضائی تحقیق اور تجسّس ، صحت سے متعلق احتیاط ، تعلیم و تعلّم ، مواصلاتی نظام اور سائنسی تحقیق پر گہرے نقوش مرتب کیے ہیں۔
کمپیوٹر کے فوائد اور نقصانات یا خوبیاں اور خامیاں مندرجہ ذیل ہیں
کمپیوٹر کے فوائد (Benefits) -: تیز رفتار(High Speed) ‘ درستگی(Accuracy) ‘ زیادہ سٹوریج (Large Storage) ‘
بوریت کا احساس (Diligence) ‘ تھکاؤٹ(Tireless) ‘ تابعدار(Obedient) ‘ اورکام کی نوعیت(Variety of tasks) ۔
کمپیوٹر کے نقصانات-:(Drawbacks)ذھانت سے عاری(No Inteligence) ‘ تفصیل کی ضرورت (Needs Details) ‘
مہنگا (Expensive) ‘ زیادہ مہارت (High Skill) ‘ جسمانی کمزوری (Physical threats) ۔
سوال نمبر-: 2کمپیوٹر کے اقسام (Types) تفصیلاً بیان کریں؟
کمپیوٹر کے اقسام -: کمپیوٹرکے مندرجہ ذیل تین اقسام ہیں۔
-1 اینالاگ کمپیوٹر -2 ڈیجیٹل کمپیوٹر -3 ہائی بریڈکمپیوٹر
-1 اینالاگ کمپیوٹر -:( Aanlog Computer ) ا ینالاگ کمپیوٹر پہلا کمپیوٹر ہے۔ جس نے جدید ڈیجیٹل کمپیوٹرکی راہیں ہموار کی۔
ا ینالاگ کمپیوٹر ڈیٹا کو لہروں کی صورت میں حاصل کرتا ہے۔ اینالاگ ڈیٹا فاصلہ ،سپیڈ ، دباؤ ، ٹمپریچر ، مائع یا گیس کے بہاؤ کی شرح ، کرنٹ، وولٹیج اور طبعی مقداروں کی شدت پر مشتمل ہوتاہے۔ا نالاگ کمپیوٹرانجینئرنگ اور سائنسی تحقیق کیلئے زیادہ تر استعمال کئے جاتے ہیں۔یہ کمپیوٹر بہت تیز ہوتے ہیں۔
-2 ڈیجیٹل کمپیوٹر-:( Digital Computer ) ڈیجیٹل کمپیوٹر اعداد ، حروف اور اسپیشل علامات کے ذرئعے کام کرتے ہیں۔یعنیڈیجیٹل کمپیوٹرکو ڈیٹا ہندسوں کی شکل میں مہیا کیا جاتا ہے۔ جدید ڈیجیٹل کمپیوٹر بہت سے سائزوں اور مختلف شکلوں میں دستیاب ہیں۔عام طور پر سکولوں، کالجوں ، یونیورسٹیوں، دفاتر اور گھروں میں ڈیجیٹل کمپیوٹراستعمال کئے جاتے ہیں۔ڈیجیٹل کمپیوٹر میں بہت بڑی
مقدار میں ڈیٹا اور معلومات کوسٹور کیا جاسکتاہیں۔ڈیجیٹل کمپیوٹر کا تجزیہ بہت درست ہوتاہے۔
-3 ہائی بریڈکمپیوٹر-:( Hybrid Computer ) اینالاگ کمپیوٹر کی تیز رفتاری اور ڈیجیٹل کمپیوٹرکی سٹوریج اور درستگی کو یکجا کر کے ایک بہترین خصوصیت والا کمپیوٹر تیار کیا گیا ہے۔جسے ہائی بریڈکمپیو کہا جاتا ہے یہ کمپیو ٹر ہسپتالوں میں میڈیکل تفتیش کیلئے ، فضائی جہازوں ، میزائلوں اور فوجی نوعیت کے اسلحہ جات وغیرہ میں استعمال ہوتے ہیں۔
اینالاگ اور ڈیجیٹل کمپیوٹرمیں بنیادی فرق-:
اینالاگ کمپیوٹرکو ڈیٹا لہروں کی صورت میں جبکہ ڈیجیٹل کمپیوٹر کو ڈیٹا ہندسوں کی صورت مہیا کیا جاتا ہے۔ اینالاگ کمپیوٹرمیں پیمائش جبکہ ڈیجیٹل میں مقداریں شمار کی جاتی ہے۔ اینالاگ کمپیوٹربہت تیز جبکہ ڈیجیٹل نہایت درستگی سے کام کرتاہے۔ اینالاگ کمپیوٹرکی میموری محدود جبکہ ڈیجیٹل کمپیوٹر کی میموری بہت زیادہ ہوتی ہے۔
سوال نمبر-: 3 چارلس بابیج کے اینا لیٹیکل انجن کے مختلف یونٹس کو بیان کیجئے؟
جواب- : چارلس بابیج (Charles Babbage) نے1812 ء میں پہلے پہل ایک ایسے ڈیفرینس انجن کا تصورپیش کیا۔جو 20ہندسوں تک صیحح جواب نکالتا تھا۔ اور پرنٹ آؤٹ بھی مہیا کرتاتھا۔20سال محنت کرنے کے بعد بابیج کی اس کام میں دلچسپی کم ہو گئی۔اس کے اس نے اپنی بقیہ زندگی اینالیٹیکل انجن(Analytical Engine) نامی ایک نئی مشین بنانے کے پروجیکٹ پر صرف کردی۔یہ مشین مکمل طور پر خودکار تھی۔اور اس کو بہت سے حسابی کاموں کیلئے پروگرام بھی کیا جا سکتا تھا۔آج کل کے کمپیوٹر میں بابیج کے ڈیزائن کردہ مشین کی بہت سی خصوصیات شامل ہیں۔
چارلس بابیج کا اینالیٹیکل انجن مندرجہ ذیل پانچ یونٹس پر مشتمل تھا:
-: (A) سٹور (Store) -: اس حصہ میں مشین میں فیڈ کئے جانے والے اعداد اور ہدایات سٹور رہتی تھیں۔
-: (B) مل -: (Mill) یہ خود کار ارتھ میٹک یونٹ تھا۔ جو کہ گراریوں اور پہیوں کے گھومنے سے ارتھ میٹک سے متعلق تمام عوام کو پایہء تکمیل تک پہنچتا تھا۔
-: (C) کنٹرول -: (Control) یہ یونٹ دوسرے تمام یونٹوں کی نگرانی کرتا تھا اور ان کو کام کرنے کی ہدایات بھی دیتا تھا۔
-: (D) ان پٹ -: (Input) یہ ان پٹ یونٹ سٹور کو ڈیٹا اور ہدایات مہیا کرتا تھا۔اور یہ یونٹ سوراخ شدہ کارڈ کی شکل میں ہوتا تھا۔
-: (E) آؤٹ پٹ-: (Out put) حسابی عمل کے بعد حاصل ہونے والے نتیجہ کوڈسپلے کرتا تھا۔ ان عوامل یا یونٹس کو دیکھ کر یہ کہنا بے جا نہ ہو گا۔ کہ چارلس بابیج نے جدید کمپیوٹرکا سنگِ بنیاد رکھا
۔سوال نمبر:4کمپیوٹر کے ادوار (Generations of Computer)بیان کیجئے؟

جواب- : کمپیوٹر کوہم پانچ ادوار میں تقسیم کر سکتے ہیں۔جو کہ مندرجہ ذیل ہیں۔
کمپیو ٹر کا پہلا د ور ( 1959 – 1942 )
پہلے دور کے کمپیوٹروں میں ویکوم ٹیوبز جوکہ تیز رفتار سوئچ کے طور پر کام کرتی تھیں استعمال کئے گئے۔ 1943ء میں پنسل وانیا یونیورسٹی میں اینی ئک (ENIAC) الیکٹرانک نیومیریکل انٹی گریٹر اینڈ کیلکولیٹر کو تیار کیا گیا ۔1949 ء میں پہلا کمپیوٹر ایڈسیک (EDSAC) بنایا گیا۔پھر 1952 ء میں دوسرا کمپیوٹر ایڈویک (EDVAC) بنایا گیا۔اسکے بعد 1951 ء میں اس سے اچھا کمپیوٹر یونیویک(UNIVAC-1) 1 یعنی یونیورسل آٹومیٹک کمپیوٹر کام کرنے لگی۔ پہلے دور کے کمپیوٹرمیں ذیل خامیاں تھیں- :
(1) بہت بڑا سائز ۔ (2) سست رفتار ۔ (3) اعتبار کا کم درجہ۔ (4) زیادہ پاور کا خرچ ۔ (5) مشکل مرمت ۔
کمپیو ٹر کا دوسرا د ور 1965 – 1959)ء(
ٹرانزسٹر ٹیکنالوجی کی آمد سے کمپیوٹر کا دوسرا دور معرض وجود میں آیا۔ویکوم ٹیوب کی بانسبت ٹرانز سٹر چھوٹے ، تیز رفتار اور کم خرچ ہوتے ہیں۔ لہذا ٹرانزسٹر کو استعمال کرتے ہوئے ایسے کمپیوٹر بنائے گئے۔ جو مائیکرو سیکنڈ میں اپنا کام مکمل کر لیتے تھے۔ ان کمپیوٹروں میں پہلی بار ہائی لیول لینگوئجز استعمال کی گئی۔مثلاً فورٹران ، کوبول اور بیسک وغیرہ۔ دوسرے دور کے کمپیوٹروں میں ہنی ویل ، آئی سی ایل اور جی ای636 , 645 وغیرہ شامل ہیں۔
کمپیو ٹر کا تیسرا د ور 1972 – 1965 )ء(
60 کے عشرہ میں آئی سی (IC) یعنی انٹی گریٹڈ سرکٹ کی آمد سے مائیکرو الیکٹرانکس کا دور شروع ہوا۔لہذا آئی سی کے استعمال سے کمپیوٹر کی جسامت ، قیمت اور پاور کی خرچ میں بہت زیادہ کمی آ گئی ۔ اس طرح ان کمپیوٹروں میں ڈیٹا سٹور کرنے کی صلاحیت بھی زیادہ ہو گئی ۔ او ر انکی کارکردگی بھی زیادہ قابل اعتبار ہو گئی۔ اس دور کے کمپیوٹروں میں IBM-360 کا سیریز ، ICL-1900 اور PDP-8 کا سیریز وغیرہ شامل ہے۔
کمپیو ٹر کا چوتھا د ور 1980 – 1972 )ء(
مائیکرو پروسیسر کی ایجاد سے بہت کم قیمت کے کمپیوٹر بننا شروع ہوگئے۔اور انکی سائز میں بھی بہت کمی آگئی۔ امریکہ کے انٹل(Intel) کارپوریشن نے 1971 ء میں پہلا مائیکرو پروسیسر انٹل 4004 تیار کیا ۔یہ 4 بٹ کا مائیکرو پروسیسر تھا۔پھر 1973ء میں 8بٹ کا مائیکرو پروسیسر تیار کیا ۔ اس کے بعد کلائیو سنکلیر (Clive Sinclair) نے ZX-80 اور ZX-81 کمپیوٹر بہت کم قیمت پر تیار کر کے پرسنل کمپیوٹر(PC) کے ایک نئے دور کا آغاز کر دیا۔ اس دور کا ایک دوسرا کمپیوٹر ایپل (Apple) جو 1976ء میں تیار کیا گیا۔ ان کے علاوہ کموڈور ، IBM-3033,4300 ، سائبر205 ، شارپ PC-1211 وغیرہ اہم کمپیوٹروں میں شامل ہیں۔
کمپیو ٹر کا پانچوا ں د ور 1980 ء ۔ اور اس کے بعد -:
چوتھے دور تک کمپیوٹرمیں سب سے بڑی خامی یہ تھی کہ کمپیوٹر سوچنے کی قوت سے عاری تھے۔اور یہ بات سائنسدانوں کیلئے ایک عرصہ سے مسئلہ بنی ہوئی تھی۔ کمپیوٹر کے پانچویں دور میں اس طرف قدم بڑھایا گیا۔اب کمپیوٹرز کو انسانوں کی سوچنے ، استدلال کرنے ، سیکھنے نتیجہ اخذ کرنے اور فیصلہ کرنے کی صلاحیت فراہم کی جائیں گی۔ان مشینوں میں (VLSI) سرکٹس کی ایک بہت بڑی تعداد استعمال کی جائے گی۔اس طرح مصنوعی ذہانت اور ایکسپرٹ سسٹم پانچویں دور کے کمپیوٹرز کے اہم حصے ہوں گے
سوال نمبر-: 5 کمپیوٹرز کو کتنے گروپوں میں تقسیم کیا گیا ہے ؟ ہر ایک کی تعریف کر کے مثالیں دیجئے۔
یا ڈیجیٹل کمپیوٹر کی اقسام بیان کریں۔ یا سائز کے لحاظ سے کمپیوٹر کی درجہ بندی بیان کریں ؟
جواب -: کمپیوٹرز کو چار مخصوس گروپوں میں تقسیم کیا گیا ہے۔(1) سُپر کمپیوٹر (2) مین فریم کمپیوٹر۔ (3) منی کمپیوٹر۔ (4) مائیکرو کمپیوٹر۔
(1) سُپر کمپیوٹر-: سُپر کمپیوٹر بہت پیچیدہ مسائل حل کرنے کیلئے 1980 ء میں تیار کئے گئے۔یہ سب سے مہنگے اور تیز ترین کمپیوٹر ہیں۔ یہ کمپیوٹر ہوائی جہاز کے ڈیزائن ، نیوکلائی ریسرچ ، سائنسی لیبارٹری ، اور بہت بڑے بڑے صنعتی اداروں میں استعمال ہوتے ہیں۔ کرے ٹو(Cray-II) اور کنٹرول ڈیٹا سائیبر 205 سُپر کمپیوٹر کی مثالیں ہیں۔
(2) مین فریم یا میکرو کمپیوٹر-: جیسا کہ نام سے ظاہر ہے۔ یہ بہت بڑے سائز کے کمپیوٹر ہوتے ہیں۔ اور اس کے پورے سسٹم کو سیٹ کرنے کیلئے کئی بڑے بڑے کمروں کی ضرورت پڑتی ہیں۔ یہ کمپیوٹر بہت تیز ہوتے ہیں۔ اور ان کی میموری بہت بڑی ہوتی ہیں۔ یہ ان اداروں میں استعمال ہوتے ہیں۔ جہاں بہت سے لوگ ایک ساتھ کمپیوٹر کو استعمال کرتے ہو۔مثلاً سرکاری ادارے ، بینک ،ہوائی کمپنیاں وغیرہ۔ بروف 7800B-(Burrough) ، آئی بی ایم 4341 مین فریم کمپیوٹر کی مثالیں ہیں
(3) منی کمپیوٹر-: منی کمپیوٹر چھوٹے لیکن بہت طاقتور ہوتے ہیں۔ ان کو تجارت ، تعلیم اور گورنمنٹ کے ادارو ں میں استعمال کیا جاتا ہیں ڈیجیٹل ایکوپمنٹ کارپوریشن نے ان کو 1960 کے عشرہ میں متعارف کرایا۔ آئی بی ایم کارپوریشن ، ڈیٹا جنرل کارپوریشن اور پرائم کمپیوٹرز منی کمپیوٹر بناتی ہیں۔
(4) مائیکروکمپیوٹر-: مائیکرو کمپیوٹر نسبتاً کم قیمت والا کمپیوٹر ہے۔ جس کا استعمال بہت تیزی سے بڑھ رہا ہیں۔یہ 1970ء میں مائیکرو پروسیسر بننے کے نتیجہ میں تیار ہوا۔ یہ قیمت میں بہت کم اور سائز میں بہت چھوٹے ہوتے ہیں۔ان کو پرسنل کمپیوٹر (PC)بھی کہا جاتاہے۔اس لئے ان ہر جگہ مثلاً سکولوں ، کالجوں ، یونیورسٹیوں ، سرکاری دفاتر ، بینکوں اور گھروں میں بھی استعمال ہوتے ہیں۔آئی بی ایم ،ڈیل ، کم پیک اور انٹل کے پی سی۔ ایس 2/ اور ایپل میکن ٹوش وغیرہ مائیکرو کمپیوٹر کی چند مثالیں ہیں۔
سوال نمبر-: 6 کمپیوٹرپروگرام کی تعریف کریں ؟
جواب-: کمپیوٹرپروگرام ہدایت دینے کا وہ عمل ہے۔جس کے تحت کمپیوٹر اپنا کام سرانجام دیتاہے۔اسطرح پررگرامنگ کمپیوٹروں سے رابطہ کا ایک طریقہ ہے۔
ابتدائی پروگرام مشین لینگوئج میں تیا ر کیئے گئے۔اسمیں بائنری کوڈ کو استعمال کیا گیاجو کہ صرف دو اعداد 0 اور 1 پر مشتمل ہوتاہے۔ہدایت دینے کا یہ طریقہ بہت مشکل اور پیچیدہ تھا ۔اسلئے پروگرام بنانے والوں نے مشین لینگوئج کے بجائے اسمبلی لینگوئج میں پروگرام تیا ر کرنا شروع کر دئیے۔دوسری پررگرامنگ لینگوئجزجو کہ آسانی سے استعمال کی جاتی ہیں۔ہائی لیو ل لینگوئجز ہیں جیسے بیسک ، فورٹران، کوبول ، پاسکل اور سی و C ++ وغیرہ۔
اس طرح کمپیوٹر لینگوئجز کے تین اقسام بیان ہوئے -:1 مشین لینگوئج -:2 اسمبلی لینگوئج -:3 سمبالک یا ہائی لیول لینگوئج۔
سوال نمبر-: 7 مشین اور اسمبلی لینگوئجز کو کیوں لو لیول لینگوئجز کہا جاتا ہے ؟
جواب -: مشین لینگوئج -: بائنری کوڈ میں دی گئی ہدایات کے سیٹ کو مشین لینگوئج کہتے ہیں۔کمپیوٹر کا CPU اسکو براہ راست سمجھتاہے۔ابتدائی پروگرام مشین لینگوئج میں تیا ر کیئے گئے۔اسمیں بائنری کوڈ کو استعمال کیا جاتا ہے جو کہ صرف دو اعداد 0 اور 1 پر مشتمل ہوتاہے۔ مشین لینگوئج میں دی گئی ہدایت کے بنیادی طور پر دو حصے ہوتے ہیں پہلے حصہ کو کمانڈ یا آپریشن کہتے ہیں۔ اور دوسرا حصہ ایک یا دو آپرینڈ پر مشتمل ہوتا ہے۔
اسمبلی لینگوئج -: اسمبلی لینگوئج ایک لو لیول لینگوئج ہے کیونکہ یہ پرابلم کی لینگوئج کے مقابلہ میں کمپیوٹر کی مشین کوڈ سے زیادہ مشابہت رکھتی ہے۔ اسمیں تیار کئے گئے پروگرام کو مشین لینگوئج میں تبدیل ہونے کیلئے ایک اسمبلر سے گزرنا پڑتاہے۔ اسمبلی لینگوئج میں مشین لینگوئج کے تمام آپریشن کوڈزکوالفاظ اور علامتوں سے جن کو نی مونک کوڈز کہتے ہیں بدل دئے جاتے ہیں مثال کے طور پر Stop Process کیلئے آپریشن کوڈ (000 000) جبکہ نی مونک کوڈ(HLT) کو استعمال کیاجاتا ہے۔ اس طرحAdditionکیلئے آپریشن کوڈ (000 010) جبکہ نی مونک کوڈ (ADD) اورMultiplyآپریشن کوڈ (000 100) جبکہ نی مونک کوڈ(MUL) استعمال کیا جاتا ہے۔
سوال نمبر-: 8 لو لیول لینگوئج اور ہائی لیول لینگوئج کے درمیان فرق بیان کریں؟
جواب -: کمپیوٹر کی بنیادی لینگوئج لو(Low) لیول لینگوئج ہے۔ اسمیں ہدایات کو بائنری کوڈ یا علامتی کوڈ میں دیئے جاتے ہیں۔ مشین لینگوئج اور اسمبلی لینگوئج لولیول لینگوئجز ہیں۔
دوسری پروگرامنگ لینگوئج ہائی (High) لیول لینگوئج ہے۔ مشین لینگوئج کو سمجھنے میں درپیش مشکلات کو انگریزی الفاظ سے علامتی کوڈ بنا کر حل کیا گیا۔ لھذا یہ زبان پروگرام لکھنے میں بہم آسانی پہنچاتی ہیں۔ایک ہائی لیول لینگوئج میں لکھا ہوا پروگرام اسی کمپیوٹر پر رن (Run) کیا جاتاہے۔ جسمیں اس لینگوئج کا کمپائلر(Compiler) یا ٹرانسلیٹر موجود ہو۔ کمپائلر ایک سسٹم سافٹ وئیر پروگرام ہوتا ہے جو ایک ہائی لیول لینگوئج میں لکھے ہوئے پروگرام کا کمپیوٹر کے قابل فہم لو لیول لینگوئج میں ترجمہ کرنے کیلئے استعمال کیا جا تا ہے۔ زیادہ مقبول ہائی لیول لینگوئجز میں سے کچھ درج ذیل ہیں:
بیسک(BASIC) ، فورٹران(Fortron) ، کوبول(COBOL) ُ پاسکل (Pascal) ، سی (C) ، سی ++ (C++) اور جاوا (Java) وغیرہ۔
سوال نمبر-: 9 مندرجہ ذیل ہائی لیول لینگوئجز پر نوٹ لکھئے : بیسک ، فورٹران ، کوبول ، پاسکل اور سی
جواب -: -:1 بیسک (BASIC) BASIC -: بیسک(Beginners All-Purpose Symbolic Instruction Code) کامخفف ہے۔ یہ ابتدائی درجے کے پروگراموں کے لئے ڈیزائن کی گئی اور سب سے پہلے 1964 ء میں متعارف کرائی گئی۔یہ لینگوئج انگریزی زبان سے کافی مشابہت رکھتی ہے۔ اوریہ سب سے زیادہ استعمال ہونے والی اور سب سے آسانی سے سیکھی جانے والی ہائی لیول لینگوئج ہے اب تک اس کے مختلف ورژن پیش کئے جا چکے ہیں۔ انمیں جی ڈبلیو بیسک ، کوئیک بیسک، ٹربو بیسک اور وژوئل بیسک وغیرہ شامل ہیں۔
-: 2 فورٹران (FORmula TRANslation – FORTRAN) -: فورٹران آئی بی ایم کمپیوٹرز کیلئے 1957ء میں بنائی گئی۔ یہ ریاضی ، سائنس اور انجینئرنگ کے مسائل کو حل کرنے کیلئے تیار کی گئی۔ یہ ایک مستند ہائی لیول لینگوئج ہے۔ کئی مرتبہ اس کی نظر ثانی کی گئی۔ اس کا ایک نظر ثانی شدہ نسخہ فورٹران 37 ہے جو کہ 1978 ء میں شائع کیا گیا۔ فورٹران اُن ابتدائی لینگوئجز میں سے ہے۔ جنہوں نے ماڈولر پروگرامنگ کا تصور متعارف کرایا۔
کوبول(COBOL) -:کوبول (COmmon Business Oriented Language) ایک مستند ہائی لیول لینگوئج ہے جو کہ 1959 ء میں تیا ر کی گئی ۔ یہ جنرل ،کمرشل اور بزنس کے مقاصد کے لئے بنائی گئی۔ کوبول وہ ہائی لیول لینگوئج ہے جو کثیر تعداد کے ڈیٹا کو ہنڈل کرتی ہیں۔
-: 4 پاسکل(PASCAL) -: یہ ایک پروگرامنگ لینگوئج ہے۔ جس کا نام فرانسیسی حساب دان بیلز پاسکل (BlaisePascal) کے نام پر رکھا گیا ۔ یہ 1970ء میں سٹرکچرڈ پروگرامنگ کے تصور پر تیار کی گئی ۔ اور 1971ء میں اس کا استعمال شروع کیا گیا یہ بھی ایک ہائی لیول لینگوئج ہے جو کمپیوٹر سائنس میں بہت زیادہ مقبول ہے۔
-: 5 سی (C) -: سی ایک پروگرامنگ لینگوئج کا پورا نام ہے۔ جس کو 1974 ء میں برین کارنیگن اور ڈینس ریچی نے تیا ر کیا۔ آپریٹنگ سسٹم لکھنے کے لیے یہ پروگرامز کی ایک دل پسند لینگوئج ہے۔ سی میں لکھے گئے پرورام تیز اور قابل عمل ہوتے ہیں۔یہ ایک لحاظ سے ہائی لیول اور اسمبلی لینگوئج کا امتزاج ہے۔اس لئے اسے مڈل لینگوئج بھی کہا جا سکتاہے۔ سی(C) لینگوئج کے مختلف ورژن ہیں مثلاً C , C+ , C++ , وغیرہ۔
سوال -:10 لینگوئج پروسیسرز(Language Processors) سے کیا مراد ہے ؟ اس کے اقسام بیان کریں۔
OR ( What is Translation Software and what are its Types )
جواب -: لینگوئج پروسیسر ایک ٹرانسلیشن سافٹ وئیر ہے۔ جس کے ذریعہ کمپیوٹر دی گئی ہدایات کو سمجھتا ہے۔ اور پھر ان کے مطابق کام کرتا ہے ۔چونکہ کمپیوٹر صرف مشین لینگوئج کو ہی سمجھ سکتا ہے۔ اور مشین کوڈ میں پروگرام لکھنا بہت مشکل ہے۔ اس لیے لینگوئج پروسیسر کا استعمال بہت ضروری ہے۔ تاکہ یہ اس لینگوئج کو مشین لینگوئج میں تبدیل کر دے۔
لینگوئج پروسیسریا ٹرانسلیشن سافٹ وئیر تین اقسام کے ہوتے ہیں۔
-: 1 اسمبلر (Assemblers) -: یہ ایک سسٹم سافٹ وئیر ہے۔ جو کہ از خود اسمبلی لینگوئج کو اس کی متبادل بائنری مشین لینگوئج میں تبدیل کر دیتاہے۔
-: 2 کمپائلر (Compiler) -: یہ بھی ایک سسٹم سافٹ وئیر ہے جو کہ از خود کسی ہائی لیول لینگوئج میں لکھے گئے پروگرام اس کے متوازی لو لیول مشین لینگوئج میں تبدیل کر دیتاہے۔ایک کمپائلر اس سورس پروگرام کا ترجمہ کر سکتاہے۔جس کیلئے وہ ڈیزائن کیا گیا ہے۔
Source Pro > Compiler > Object Program > CPU for Execution > Output Result.
-: 3 انٹر پریٹر (Interpreter) -: انٹر پریٹر ایک دوسرے قسم کا مترجم ہے۔ جو کہ ہائی لیول لینگوئج میں لکھے ہوئے پروگرام کے ہر بیان کو مشین کوڈ میں تبدیل کر دیتاہے۔ اور اگلے بیان کے ترجمہ سے پہلے اس پر عمل درآمد کر لیتاہے۔ اسی وجہ سے یہ کمپائلر سے مختلف ہے۔

Leave a Reply

ALL NEW RESULTS
Educational News

Updated Educational News

Categories
POSTS BY DATE
December 2014
M T W T F S S
« Nov   Jan »
1234567
891011121314
15161718192021
22232425262728
293031